19 C
London
Friday, July 23, 2021

!!عثمان مرزا ایک گھناؤنا کردار

- Advertisement -spot_imgspot_img
- Advertisement -spot_imgspot_img

تین دن پہلے رات گئے ایک نئے ٹویٹر اکاؤنٹ سے کچھ ویڈیوز اپلوڈ ھوتی ہیں اور وائرل ہو جاتی ہیں ۔ گمان ہے کہ وہ اکاؤنٹ بھی شاید انہی ویڈیوز کو شیر کرنے کے لیے بنا گیا تھا۔

عثمان مرزا نامی ایک شخص جو اس سارے گھنائونے اور گندے کھیل کا مرکزی کردار ہے۔ اس کو ایک جوڑے کے ساتھ نہایت غیر انسانی سلوک کرتے دکھایا گیا ہے۔ یہ ویڈیو قریبا چھ ماہ پرانی ہے۔
عثمان مرزا نے اسلام آباد میں ایک ریسٹ ہاؤس بنایا رکھا ہے جو یہ لوگوں کو کرائے پر دیتا ہے اور وہ اس کا ریسٹ ھاؤس اور ایک فلیٹ جو یہ کرائے پر دیتا ہے ۔ قیاس یہی ہے کہ یہ جگہیں غیر اخلاقی حرکات کے لئے استعمال ہوتیں رہی ہیں۔ مزید تحقیق سے یہ بات بھی سامنے آئی ہے کہ گیسٹ ھاوس اور فلیٹ میں خفیہ کیمرے نصب ہیں جن سے حاصل ہونے والی ویڈیوز بعدازاں عثمان مرزا ان معصوم لوگوں کو بلیک میل کرنے کے لئے استعمال کرتا تھا۔
اپنے دوست کے ساتھ مل کر حافظ عطاء الرحمن نے ہی یہ گھر اس جوڑے کو کرائے پر دیا تھا اور پھر انہی دوستوں کے ساتھ مل کر وہاں پہنچ گیا۔ اور فلیٹ کے اندر داخل ھوگیا۔ اس جوڑے پر نہ صرف تشدد کیا بلکہ لڑکی کے ساتھ نا زیبا حرکات کیں اور لڑکے سے پیسے بھی چھیںن لئے۔ مزید برآں ان دونوں کو بلیک میل بھی کرتا رہا۔
عثمان مرزا اور اس کے ساتھی پولیس کی حراست میں ہیں اور ان سے تفتیش کے دوران بہت خطرناک اور شرمندہ کر دینے والے حقائق سامنے آئے ہیں یہ ایسی ہی ویڈیوز بنا کر لوگوں کو بلیک میل کر کے ان سے پیسے لیتا تھا اس کے موبائل سے تیرہ اور ایسی ہی ویڈیوز اور بہت سا مواد برآمد ھوا ہے۔

یہ باقاعدہ طور پر ایک حیوان صفت شخص ہی جو لوگوں کی عزتوں کے ساتھ کھیلتا ہے۔ وزیراعظم عمران خان صاحب نے بھی اس واقعے کا سختی سے نوٹس لیا اور آئی جی اسلام آباد کو حکم دیا اس کیس کو منطقی انجام تک پہنچانا جائے تاکہ ایسے بدکردار لوگوں کو پیغام دیا جا سکے کہ ریاست ایسی کسی حرکت کو برداشت نہیں کرے گی۔
جب اس شخص عثمان مرزا کو عدالت میں پیش کیا گیا تو اس نے اپنا منہ ماسک سے چھپایا ھوا تھا۔ عدالتی کارروائی کے دوران ایک دلچسپ چیز دیکھنے میں آئی کہ اس کے باقی ساتھیوں نے خود کو اس سے الگ کرنے کی کوشش کی اور کہا کہ اس نے ہمیں ٹیلی فون کر کے وہاں بلایا تھا۔ عثمان مرزا جیسے لوگ ہمارے معاشرے کا ناسور ہیں۔ ان جیسے لوگوں کی وجہ سے بہنوں بیٹیوں کی زندگیاں غیر محفوظ ہو گئیں ہیں۔
عدالت میں عثمان مرزا کے وکیل نے پیشی کے دوران کہا کے عثمان مرزا کا اس جوڑے کے ساتھ پیسوں کا مسئلہ تھا۔ دو کروڑ کا چیک باؤنس ھو گیا تھا جس کی وجہ سے اس نے غصے میں یہ سارا کام کیا۔
ابھی اس کیس میں مزید تفتیش جاری چار روزہ جسمانی ریمانڈ لیا ہے اس کے اور ساتھیوں کے موبائل کا فارنزک آدٹ کروایا جائے گا۔ آئی جی اسلام آباد نے آج ایک بیان میں کہا ہے عثمان مرزا کو سزائے موت یا عمر قید کی سزا ھوگی۔ امید ہے کہ انشاء اللہ اس شخص کو سزا دے کر عبرت کا نشان بنایا جائے گا۔

- Advertisement -spot_imgspot_img
Umar Siddique
Writer is Lawyer and Social Media Activist.
Latest news
- Advertisement -spot_img
Related news
- Advertisement -spot_img

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here